• nallatareen 5w

    غزل

    جب ملنا نہیں ہوتا تو پھر بلاتی کیوں ہو؟
    خواب میں آنا نہیں ہوتا تو سلاتی کیوں ہو؟

    یہ چہرہ یہ آنکھیں تم نے خود بنائی ہیں؟
    پھر اس حسن پر اپنے اتنا اتراتی کیوں ہو؟

    خلوت میں تو قربِ خدا تعالیٰ ملتا ہے مزید
    تم پھر اس تنہائی سے اتنا گھبراتی کیوں ہو؟

    آتشِ عشق تو بُجھ کر بھی نہیں بجھتی
    جب بجھانی ہی تھی تو آگ لگاتی کیوں ہو؟

    پاگل اپنوں کو تھوڑی نا پھر آزمایا جاتا ہے
    تم اپنوں کو ہی یوں ہر بار آزماتی کیوں ہو؟

    کس درد کو اپنے دامن سے باندھ لائی ہو؟
    یوں بات بات پر بے وجہ مسکراتی کیوں ہو؟

    مرے سامنے اغیار کا تذکرہ مقصود کیا ہے؟
    جب میں کہانی میں نہیں تو سناتی کیوں ہو؟

    تری دید کے بغر رات کی صبح نہیں ہوتی
    امینٓ کو زندہ رہنے کیلئے تم تڑپاتی کیوں ہو؟
    ©nallatareen