• nallatareen 6w

    غزل

    پیار ہوتا ہے ملن ہوتا ہے پھر ہجر ہوتا ہے
    یہ سفر حقیقتاً اس قدر مختصر ہوتا ہے

    پیار ہوتا ہے ملن ہوتا ہے پھر ہجر ہوتا ہے
    اس کے برعکس کب ہوتا ہے کدھر ہوتا ہے

    پیار ہوتا ہے ملن ہوتا ہے پھر ہجر ہوتا ہے
    پھر یہ درد کا قصہ سب سے ذکر ہوتا ہے

    پیار ہوتا ہے ملن ہوتا ہے پھر ہجر ہوتا ہے
    پھر دل خوشفحم ملن کا منتظر ہوتا ہے

    پیار ہوتا ہے ملن ہوتا ہے پھر ہجر ہوتا ہے
    ہم عاشقوں پر ہر مشورہ بے اثر ہوتا ہے

    پیار ہوتا ہے ملن ہوتا ہے پھر ہجر ہوتا ہے
    پھر ان یادوں کے سہارے گزر بسر ہوتا ہے

    پیار ہوتا ہے ملن ہوتا ہے پھر ہجر ہوتا ہے
    مت پوچھ ہم عاشقوں کا کیا حشر ہوتا ہے

    پیار ہوتا ہے ملن ہوتا ہے پھر ہجر ہوتا ہے
    ہم عاشقوں کو آخر درد ہی میسّر ہوتا ہے

    بخدا ہر ہر زخم گویا تازہ ہرا ہوجاتا ہے
    جب کبھی اُس کی گلیوں سے گزر ہوتا ہے

    اُس کی نشیلی آنکھیں ہلاک کر ڈالیں گی
    جیسے ہر نشا صحت کیلئے مضر ہوتا ہے

    امینٓ اب وجہِ بیوفائی بھی نہیں پوچھتے
    اُن کے پاس تو ہر بار ایک نیا عذر ہوتا ہے
    ©nallatareen